171

ہندو ہونے کی وجہ سے کھلاڑی دانش کیساتھ کھانا نہیں کھاتے تھے، شعیب اختر

لاہور(خالد محمود خالد)پاکستان کے مایہ ناز کرکٹر شعیب اختر نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ پاکستانی ٹیم کے ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی دانش کنیریا جب کھانے کی میز پر آتے تھے تو ٹیم کے کئی کھلاڑی ان کے ساتھ کھانا کھانے سے گریز کرتے تھے۔
دریں اثناء دانش کنیریا نے کہا ہے کہ ہندو مذہب سے تعلق رکھنے کی وجہ سے انہیں ٹیم میں شعیب اختر، انضمام الحق، یونس خان اور محمد یوسف کے علاوہ کسی کھلاڑی کی طرف سے عزت اور سپورٹ نہیں ملی۔

جنگ سے بات کرتے ہوئے دانش کنیریا نے کہا کہ وہ شعیب اختر کی بہت زیادہ عزت کرتے ہیں اور اب جبکہ انہوں نے ان کے بارے میں بیان دیا ہے ان کی عزت مزید بڑھ گئی ہے۔

دانش کنیریا نے کہا کہ ان میں اس بات کا حوصلہ نہیں تھا کہ وہ اپنے ساتھ ہونے والے اس سلوک کے بارے میں بات کریں لیکن اب شعیب اختر کی وجہ سے ان میں حوصلہ پیدا ہو گیا ہے اور وہ جلد ہی ان تمام کھلاڑیوں کے نام بتائیں گے جو صرف ہندو ہونے کی وجہ سے ان کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ انضمام الحق کھلاڑیوں کو منع کرتے تھے کہ مذہب کی بنیاد پر کسی بھی کھلاڑی سے نفرت نہیں کرنی چاہئے۔

انضمام کہتے تھے کہ دانش پاکستان کے لئے کھیلتا ہے اس سے بڑا کوئی اعزاز نہیں۔

دانش نے مزید کہا کہ انہیں اپنی ماتا جی کی آشیرباد حاصل ہے۔ وہ پیدائشی طور پر ہندو ہیں اور مرتے دم تک اپنے مذہب پر قائم رہیں گے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں