108

ساہیوال فائرنگ واقعے کی غیر جانبدارانہ انکوائری کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دے دی

Spread the love
  • 3
    Shares

ساہیوال ( ) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ ساہیوال فائرنگ واقعے کی غیر جانبدارانہ انکوائری کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دے دی گئی ہے اور اس واقعے میں جو شخص بھی ملوث ہوا اسے قرار واقعی سزا دی جائے گی ۔واقعے میں زخمی ہونیوالے بچوں کا تمام علاج معالجہ اور کفالت پنجاب حکومت برداشت کرے گی ۔انہوں نے یہ بات ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال میں ساہیوال فائرنگ واقعے میں زخمی ہونیوالے بچوں کی عیادت کرنے کے بعد میڈیا سے خصوصی بات چیت میں کہی ۔اس موقع پر آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی ،کمشنر ساہیوال ڈویژن عارف انور بلوچ ،آر پی او شارق کمال صدیقی ،ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو ،ڈی پی او کیپٹن (ر)محمد علی ضیاء ،پرنسپل ساہیوال میڈیکل کالج ڈاکٹر محمد طارق ،ایم ایس ڈاکٹر شاہد نذیر کے علاوہ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما رائے حسن نواز خان ،ضلعی صدر رانا آفتاب احمد خان بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ اس واقعہ پر جتنا بھی افسوس کیا جائے کم ہے ۔وہ خصوصی طور پر میانوالی سے متاثرین کی دلجوعی کیلئے ساہیوال آئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ایڈیشنل آئی جی کی سربراہی میں جے آئی ٹی تشکیل دی گئی ہے جو 72 گھنٹوں میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی ۔واقعے میں سی ٹی ڈی کا کوئی آدمی ملوث پایا گیا تو اسے سزا دی جائے گی۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ زخمی بچے میرے اپنے بچے ہیں اور ان کا مکمل علاج معالجہ اور کفالت صوبائی حکومت کے ذمہ ہوگی ۔ اس سے پہلے وزیر اعلیٰ پنجاب نے ڈی ایچ کیوٹیچنگ ہسپتال کے شعبہ اطفال میں زیر علاج زخمی بچوں کی عیادت کی ۔لواحقین کے مطالبے پر وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پرنسپل میڈیکل کالج کو ہدایت کی کہ بچوں کو فوری طور پر جنرل ہسپتال لاہور شفٹ کیا جائے جہاں انہیں مکمل صحت یابی تک زیر علاج رکھا جائے ۔انہوں نے یقین دلایا کہ واقعے کی انتہائی غیر جانبداری سے انکوائری کروائی جائے گی اور انہیں انصاف ملے گا ۔لواحقین نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان ،وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے فوری نوٹس اور ضلعی انتظامیہ ساہیوال کے تعاون پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں