8

ساہیوال۔ ضلع ساہیوال میں ذوالجناح کے 211جلوسوں اور807مجالس کی سکیورٹی کے انتظامات مکمل ہیں.ڈپٹی کمشنر محمدزمان وٹو۔

Spread the love

بہ تسلیمات ڈائر یکٹر تعلقات عامہ ساہیوال

ساہیوال (08ستمبر 2019)صوبائی وزیر زکوة و عشر شوکت علی لالیکا نے کہا ہے کہ محرم الحرام کے دوران عزاداروں کی سکیورٹی کو یقینی بنانے کے تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں اور تمام مجالس اور ماتمی جلوسوں کو حفاظت کے لئے منتظمین کے تعاون سے 3 سطحی سکیورٹی دی جا رہی ہے -انہو ںنے یہ بات کمشنر آفس میں محرم الحرام کے دوران سکیورٹی کے انتظامات سے متعلقہ بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہی -اجلاس میں کمشنر ساہیوال ڈویژن ندیم الرحمن ،آر پی او ہمایوں بشیر تارڑ اور ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو بھی موجود تھے -انہو ں نے کہا کہ صوبائی حکومت عوام کے جان و مال کے تحفظ کو ہر صورت یقینی بنائے گی اور اس سلسلے میں تمام مکتب فکر کے علماءکا بھی تعاون حاصل کیا گیا ہے -صوبائی وزیر زکوة نے ساہیوال ڈویژن میں پر امن محرم الحرام کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا اور ہدایت کی کہ ضلعی انتظامیہ ،پولیس،علماءکرام اور منتظمین کے درمیان قریبی رابطہ برقرار رکھا جائے -اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے کمشنر ندیم الرحمن نے بتایا کہ ساہیوال ڈویژن میں 461جلوس اور1749مجالس کےلئے حفاظتی اقدامات مکمل کر لئے گئے ہیں اور ان کی سی سی ٹی وی کیمروں سے مانیٹرنگ بھی جاری ہے -آر پی او ہمایوں بشیر تارڑ نے بتایا کہ پولیس نے مجالس اور جلوسوں کی فول پروف سکیورٹی کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لا رہی ہیں اور منتظمین ،علماءاور رضا کاروں کا بھی تعاون حاصل ہے -انہوں نے ساہیوال ڈویژن میں فرقہ وارانہ فضا کو مثالی قرار دیا اور یقین دلایا کہ محرم الحرام کے دوران امن و امان کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا -اجلاس میں ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو نے بتایا کہ ضلع ساہیوال میں ذوالجناح کے 211جلوسوں اور807مجالس کی سکیورٹی کے انتظامات بھی مکمل ہیں اور پورے ضلع میں 110سی سی ٹی وی کیمرے،10واک تھروگیٹس اور 263میٹل ڈٹیکٹرز سے بھی نگرانی کی جا رہی ہے -انہوں نے تمام مکتب فکر کے علماءکے کردار کو بھی سراہا اور یقین دلایا کہ ضلع بھر میں امن و امان کی فضا کو برقرار رکھا جائے گا -صوبائی وزیر زکوة و عشر شوکت علی لالیکا نے پاکپتن میں جاری بابا فرید گنج شکر کے سالانہ عرس کی سکیورٹی کے حوالے سے بھی ہدایت کی کہ زائرین کی حفاظت کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ انہیں تمام سہولیات بھی فراہم کی جائیں تا کہ وہ عرس تقریبات میں مذہبی جوش و جذبے میں شریک ہو سکیں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں