6

ریجنل پولیس آفس ساہیوال میں میڈیکل سے متعلق جرائم کی تفتیش کیلئے ورکشاپ

Spread the love

ساہیوال(63نیوز ساہیوال) ریجنل پولیس آفیسر ساہیوال ہمایوں بشیر تارڑ نے کہا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی اور سائنسی ترقی سے مقدمات کی تفتیش میں بڑی مدد ملی ہے۔ تفتیشی افسرا ن کو چاہیے کہ اس سے بھرپور فائدہ اُٹھائیں۔ کرائم سین محفوظ کرتے وقت شواہد ضائع ہونے سے بچائیں تاکہ مجرمان کو ان کے جرم کی سزا مل سکے۔ وہ ریجنل ٹریننگ سنٹر ساہیوال میں منعقدہ ایک روزہ تربیتی ورکشاپ “میڈیکولیگل ورک، پوسٹ مارٹم، طبی معائنہ اور پولیس فائل کی تیاری” کے شرکاء سے خطاب کررہے تھے۔ ورکشاپ میں ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ساہیوال ڈویژن ڈاکٹر صادق سلیم کمبوہ، پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کے ڈاکٹر ناصر صدیق و ڈاکٹر عاصم جابر سمیت تینوں اضلاع کے ڈاکٹر صاحبان، پراسیکیوٹر افسران، ڈی ایس پی صاحبان، ایس ایچ اوز اور تفتیشی افسران نے شرکت کی۔
ورکشاپ میں میڈیکل سے متعلقہ مقدمات کی تفتیش میں خامیوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔ تفتیش، پراسیکیوشن اور فرانزک ایجنسی کے ماہرین نے پولیس فائل کی تیاری میں خامیوں کی نشاندہی کی تاکہ آئندہ مقدمات میں یہ خامیاں دور ہو سکیں اور مجرمان کو قرار واقعی سزا مل سکے۔
آر پی او ساہیوال ہمایوں بشیر تارڑ نے ہدایت کی کہ یہ خامیاں تمام تفتیشی افسران کے علم میں لائی جائیں تاکہ آئندہ پولیس فائل کی تکمیل مؤثر طور پر ہو سکے۔ ڈاکٹر صادق سلیم ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ساہیوال ڈویژن نے اس موقع پر تفتیشی افسران اور ڈاکٹر صاحبان کے درمیان رابطہ کار کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ مقدمات کی بروقت اور مؤثر تکمیل کے لئے دونوں کا رابطہ مثالی ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ میڈیکل سے متعلقہ کسی بھی قسم کی مشاورت کے سلسلہ میں ہمارے دروازے پولیس کے لئے ہر وقت کھلے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں