6

کشمور کے نواحی گاؤں جکھرانی میں کاروکاری کے الزام میں خاتون قتل،ورثاء کاتون کی لاش انڈس ہائی وے پر رکھ کر دھرنا روڈ بلاک ٹریفک کی آمدورفت معطل

او/ سی

کشمور کے نواحی گاؤں جکھرانی میں کاروکاری کے الزام میں خاتون قتل،ورثاء کاتون کی لاش انڈس ہائی وے پر رکھ کر دھرنا روڈ بلاک ٹریفک کی آمدورفت معطل ہونے سے مسافروں کو شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑا ہے کشمور کے نواحی علاقے 82 آر ڈی گاؤں محمد خان جکھرانی میں شوہر ثمرالدین اور سسر نے مل کاروکاری کے الزام پر 23 سالا مائی زیندک کو گلہ دبا کر قتل کر دیا پولیس نے مقتولہ کی لاش کو سول ہسپتال منتقل کر دیا سول ہسپتال میں ڈاکٹر نہ ہونے کے باعث مقتولہ کے ورثاء نے لاش کو انڈس ہائے وے پر رکھ کر دھرنا دے دیا روڈ بلاک کر دی ورثاء کا کہنا ہے کہ تعلقہ ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹر کا نہ ہونا حکومت سندھ پر سوالیہ نشان ہے مقتولہ خاتون کے ورثاء کا ایم ایس کشمور سول ہسپتال انتظامیہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی دہرنے کے باعث سندھ پنجاب اور بلوچستان کے آنے اور جانے والی آمدورفت معطل مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا دوسری جانب نے پولیس کی یقین دہانی پر مظاہرین نے دہرنا ختم کر دیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں