40

چیچہ وطنی الزواج میرج ھال کو عدالتی حکم پر ڈی سیل کر دیا 

Spread the love

چیچہ وطنی الزواج میرج ھال کو عدالت کے حکم پر ڈی سیل کر دیا گیا چیچہ وطنی کے مشہور الزواج میرج ھال کے اونر چوہدری علی گل نے عدالت جناب بدیع الزماں سول جج کی عدالت سے حکم امتناعی حاصل کیا تھا کہ میونسپل کمیٹی چیچہ وطنی کمرشلائزیشن فیس کو بغیر حساب کتاب کے وصول نہ کرے جبکہ 35 لاکھ روپے میونسپل کمیٹی الزواج میرج ھال سے وصول کر چکے ہیں الزواج میرج کا موقف ہے کہ اگر ہمارے ذمہ کوئی دیگر بقایا جات بنتے ہیں تو حساب کتاب کر لیں لیکن میونسپل کمیٹی ایسا کرنے سے انکاری ہیں اسی بنا پر عدالت کی جانب سے حکم امتناعی جاری کیا گیا تھا اور حکم امتناعی کی موجودگی میں اسسٹنٹ کمشنر چیچہ وطنی اور میونسپل کمیٹی کے عملہ نے الزواج میرج ھال کو سیل کردیا جس پر توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی گئی جس میں عدالت کی جانب سے الزواج میرج ھال کو ڈی سیل کرنے کے احکامات جاری ہونے کے باوجود اسسٹنٹ کمشنر اور میونسپل کمیٹی کی جانب سے سیاسی پریشر ہونے کی وجہ سے ڈی سیل نہ کیا گیا جس پر عدالت جناب بدیع الزماں سول جج نے عدالتی بیلف کو حکم جاری کیا گیا کہ میرج ھال کو فوری ڈی سیل کر کے عدالت میں رپورٹ پیش کریں عدالت نے رانا شہزاد اختر اور رانا عابد بشیر کو بیلف مقرر کیا بیلف نے عدالتی حکم پر عملدرآمد کرتے ہوئے میرج ھال کو ڈی سیل کر دیا .

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں