58

تحریک لبیک کے سربراہ مولانا خادم حسین رضوی ضمانت پر رہا

Spread the love

اسلام آباد (شاہدمحمود) لاہور ہائی کورٹ نے مذہبی جماعت تحریک لبیک پاکستان کے رہنماؤں خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کی درخواست ضمانتوں پر فیصلہ سناتے ہوئے ان کی ضمانت منظور کر لی ہے۔عدالت نے پیر افضل قادری کی ضمانت 15 جولائی تک منظور کرتے ہوئے ان کی رہائی کا حکم دیا۔تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس قاسم علی خان اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل بنچ نے یہ فیصلہ سنایا۔لاہور ہائی کورٹ کے بنچ نے دلائل مکمل ہونے پر 10 مئی کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔ عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کو پانچ پانچ لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم بھی دیا۔سوشل میڈیا پر جاری کیے گئے ایک ویڈیو بیان میں تحریکِ لبیک کے ترجمان پیر اعجاز اشرفی نے بتایا کہ لاہور ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری کی ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔گذشتہ برس نومبر میں املاک کو نقصان پہچنانے، لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنانے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں پر حملوں میں ملوث ہونے کے الزام میں ملک بھر سے 1800 سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا اور ان کے خلاف مقدمات انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت درج کیے گئے تھے۔نومبر میں آسیہ بی بی کو سپریم کورٹ نے بے گناہ قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف موت کی سزا کے فیصلے کو ختم کر دیا تھا جس کے بعد مذہبی اور سیاسی جماعت تحریک لیبک پاکستان کے کارکنوں کی طرف سے ملک بھر میں احتجاج شروع کر دیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں