107

ساہیوال۔اغواء کاروں سے میرامال برآمد کروایاجائے،نامزدملزمان دندناتے پھررہے ہیں،جان کوخطرہ ہے،ملزمان کو گرفتارکیاجائے۔

ساہیوال(بیوروچیف)
اغواء کاروں سے میرامال برآمد کروایاجائے،نامزدملزمان دندناتے پھررہے ہیں،جان کوخطرہ ہے گرفتارکیاجائے،SHOزمان رشیدوٹواغواء کاروں کاسرپرست ہے،164کے بیان میں عدالت کوتمام حقائق سے آگاہ کردیاہے،جان سے ماردینے کی دھمکی دیکرویڈیوبنوائی جاتی رہیں،اغواء کاروں کے کارندے میڈیاکے رابطے میں تھے،تھانہ فریدٹاؤن ضلع ساہیوال میں درج اغواء کے مقدمہ نمبر561/20بجرم 365ت۔پ کے مغوی میناررسول نے اپنی بازیابی کے بعدمنظرعام پرآکرحقائق سے پردہ اٹھادیاہے،مقامی ہوٹل میں مذکورہ بالا مقدمہ کے مدعی،اپنے والد حاجی غلام رسول چوہان اوراپنے کونسل راناعبدالحکیم خان ایڈووکیٹ ہائیکورٹ کے ہمراہ ایک پرہجوم پریس کانفرنس میں مغوی میناررسول نے تھانہ فریدٹاؤن کے سابقSHOزمان رشید وٹوکواغواء کارگروانیلہ عمران کاسرپرست قراردے دیا،میناررسول کے مطابق مقدمہ کے نامزدبڑے ملزموں انیلہ عمران اورسدیش نے اپنے کارندوں 1 فہدبلوچ2ذیشان 3عدنان 4عمران5عبدالرحمن نیازی6عثمان7اویس جٹ اورعرفان بگٹی وغیرہ کے ذریعے کئی ماہ تک محبوس کئے رکھا،33لاکھ روپے مالیتی طلائی زیورات،موٹرسائیکل،نقدی اورموبائل فون چھین کرنشہ آورادویات کھانے میں ملاکرکھلاتے رہے،نامعلوم مقام پرقید کے دوران انیلہ عمران اورSHOزمان رشیدوٹوجان سے ماردینے کی دھمکیاں دیتے ہوئے اپنے کارندوں کے ذریعے گن پوائنٹ پر اپنی مرضی کے مطابق ویڈیوبیانات جاری کرواتے رہے،مقدمہ کے مدعی میرے والد حاجی غلام رسول چوہان کی کردارکشی بھی جان سے ماردینے کی دھمکی دیکرکروائی گئی جس کی ویڈیوSHOزمان وٹونے اپنے کارندوں کے ذریعے سوشل میڈیا اوربراہ راست پولیس افسروں کو پہنچاکرگمراہ کیااورملزموں سے بھاری مالی فوائد حاصل کئے،دوران قید مجھے تشددکانشانہ بنایاجاتارہا،بھوکاپیاسا رکھ کرنشہ آورکھانے کے ذریعے بیہوش کئے رکھا،مقدمہ کے نامزدملزموں اورSHOزمان رشید وٹونے میرے اورمیرے خاندان کے ساتھ سخت زیادتی کی ہے۔اغواء کاروں اوران کی سرپرستی کرنے والوں کوگرفتارکیاجائے اورمال مسروقہ برآمد کیاجائے،مجھے اورمیرے اہلخانہ کوملزموں سے جان کاخطرہ ہے،تحفظ فراہم کیاجائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں