179

ساہیوال۔رشوت نہ دینے پر اکاؤنٹ آفس کے کلرک کا طالبعلم پر مبینہ تشدد،کپڑے پھاڑ دیئے۔

ساہیوال۔(بیوروچیف)
رشوت نہ دینے پر اکاؤنٹ آفس کے کلرک کا طالبعلم پر مبینہ تشدد،کپڑے پھاڑ دیئے۔انصاف اور حق سچ کا بول بالا کرنے والے صحافیوں نے واقعہ کی تحقیقات کر کے اصل حقائق منظرعام پر لائے۔گزشتہ چند دنوں سے مافیا نے جھوٹ بول کر سوشیل میڈیا پر اکاؤنٹ آفس پر حملہ کی خبریں شائع کروائیں۔اکاؤنٹ آفس کا کلرک مافیا بیواؤں اور یتیموں کا مال کھانے کے ساتھ ساتھ اب بھتہ مافیا اور غنڈہ گردی کی شکل اختیار کرنے لگا ہے۔واقعہ کی اصل کہانی کے مطابق طالبعلم اپنی مرحوم والدہ کی فائل پراسس کروانے آیا جسکے لیئے رشوت نہ دینے پر کلرک مافیا نے ایم فل کے طالب علم پر تھپڑوں کی بارش کر دی۔جسکا دیدہ دلیری سے سب کے سامنے تھپڑ مارنے کے اقرار کے باوجود کلرک مافیا نے الٹا طالب علم پر ہی اکاؤنٹ آفس پر حملہ کی ایف آئی آر درج کروا دی۔طالبعلم کا کہنا ہے کہ جب بھی اکاؤنٹ آفس آتا تو مجھ سے رشوت کا مطالبہ کیا جاتا تھا۔عوام نے اکاؤنٹ آفس کی غنڈہ گردی کی شدید مذمت کی ہے۔عوامی و سماجی حلقوں نے اعلی حکام سے نوٹس لےکر طالبعلم کو انصاف کی فراہمی اور جھوٹے مقدمے کو خارج کرنےکا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں