106

غیر قانونی کلب چائنیز ریسٹورنٹ کو ختم کرکے غرباءومساکین کےلیےپناہ گاہ کےطور پر مختص کر دیا گیا ۔

Spread the love
  • 78
    Shares

ساہیوال ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو کی قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی ،23 سال سے قیمتی سرکاری جگہ پر قبضہ واگزار کر لیا۔ قابض شخص ملک منصب علی نے مذکورہ جگہ پر مارکی اور ریسٹورنٹ بنا رکھا تھا ،قومی خزانے کو تین کروڑ روپے سے زائد کا نقصاب پہنچایا گیا ۔تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو نے پنجاب حکومت کے ویژن کے مطابق قبضہ گروپوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ساہیوال میں مشہور کلب چائنیز ریسٹورنٹ اور ملحقہ مارکی پر غیر قانونی قبضہ ختم کروا دیا ۔انہوں نے اس ساری کارروائی کی خود نگرانی کی اور تمام وقت موقع پر موجود رہے ۔اس موقع پر محکمہ ریونیو کے علاوہ پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات تھی ۔واضح رہے کہ ملک منصب علی نامی شخص 1996 ءسے مذکورہ سرکاری اراضی تقریباً 2 ایکڑ پر ناجائز قابض تھا اور قومی خزانے کو بھاری نقصان پہنچاتے ہوئے غیر قانونی بزنس سرگرمیوں میں ملوث تھا ۔ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو نے مذکورہ واگزار مارکی میں رمضان بازار لگانے اور ریسٹورنٹ کی ایئر کنڈیشنڈ عمارت غرباءو مساکین کیلئے قیام گاہ کے طور پر استعمال کرنے کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ قبضہ گروپوں کے خلاف ضلعی انتظامیہ کی کارروائی آئندہ بھی جاری رہے گی جبکہ اب تک ضلع بھر میں قبضہ گروپوں سے چھڑائی جانیوالی اراضی کی مالیت 3 ارب روپے سے زائد ہے ۔ ڈپٹی کمشنر ساہیوال کی اس کارروائی پر شہر کے سماجی اور سیاسی حلقوں نے انتہائی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے ڈی سی محمد زمان وٹو کی کاوشوں کو زبر دست خراج تحسین پیش کیا ہے اور کہا ہے کہ قبضہ مافیا کے خلاف مزید کارروائیوں کی بھی بھر پور حمایت کی جائے گی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں