67

آج کے بعد یہ کام کرنے سے پہلے پاک فوج سے اجازت لینی ہوگی ، آئی ایس پی آر کی جانب سے اہم ترین اعلان کر دیا گیا

Spread the love

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) آج کے بعد یہ کام کرنے سے پہلے پاک فوج سے اجازت لینی ہوگی ، آئی ایس پی آر کی جانب سے اہم ترین اعلان کر دیا گیا ۔۔دفاعی تجزیہ کار کے طورپر ریٹائرڈ فوجی افسران کو ٹی وی چینلز کے پروگرامز میں مدعو کرنے سے قبل پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ سے کلئیرنس لینا لازمی قرار دے دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی نے تمام ٹی وی چینلز کو حکم نامہ جاری کر دیا۔
پیمرا کی جانب سے جاری کردہ نوٹی فیکیشن کے مطابق ٹی وی چینلز کو نیوز اور حالات حاضرہ کے پروگرامز میں سابق فوجی افسران کو دفاعی تجزیہ کے لیے مدعو کرنے سے قبل آئی ایس پی آر سے کلیئرنس لینا ہوگی ۔ پیمرا کے مطابق متعلقہ حلقوں کی جانب سے یہ مشاہدے میں آیا ہے کہ ٹی وی شوز میں آنے والے سابق فوجی افسران موجودہ دفاعی اور سکیورٹی کے معاملات پر سے پوری طرح واقف نہیں ہوتے کیونکہ انہیں کے ریٹائر ہوئے کافی عرصہ گزر چکا ہوتا ہے ۔ مزید یہ کہ ٹی وی پر آنے والے کچھ دفاعی تجزیہ کار وفاعی تجزیے کے ساتھ ساتھ ملکی سیاست پر بھی بات کرنا شروع کر دیتے ہیں۔ جس کی وجہ سے دفاعی تجزیہ کار سیاسی بحث میں شامل ہو جاتے ہیں جو غیر قانونی ہے۔ یہ صورتحال انتہائی غیر معمولی ہے۔ پیمرا نے ہدایت جاری کیں کہ اگر کسی حالات حاضرہ یا خبروں سے متعلق ٹاک شوز میں سابق فوجی افسران کو کسی قسم کے سیاسی امور پر تبصرہ کرنے کے لیے مدعو کیا جائے تو ان سابق فوجی افسران کے نام کے ساتھ دفاعی تجزیہ کار کے بجائے صرف تجزیہ کار ہی لکھا جائے۔ پیمرا نے تمام ٹی وی چینلز کو حکم نامے پر سختی سے عمل درآمد کرنے کی ہدایت بھی کر دی ہے۔ پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کی جانب سے جاری کی گئی ان ہدایات پر عمل نہ کرنے والے ٹی وی چینلز کے خلاف کارروائی کا عندیہ بھی دیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں