72

پولیس ملازمان کے مسائل کا فوری حل اور ہرممکن ریلیف فراہم کرنا میری اولین ترجیح ہے.DPOساہیوال

Spread the love

پولیس ملازمان کے مسائل کا فوری حل اور ہرممکن ریلیف فراہم کرنا میری اولین ترجیح ہے۔تمام تھانوں میں مامورپولیس ملازمین کے ویلفئرسے متعلقہ امور کے لیے ہفتہ واری بنیاد پرباقاعدہ میٹنگ کا آغاز کر دیا گیا ہے ۔ان میٹنگز میں ملازمین اپنے محکمانہ، ذاتی یا اجتماعی مسائل کھل کر بیان کر سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کیپٹن (ر)محمد علی ضیاء نےپولیس لائینز میں ملازمین کی ویلفئر سے متعلقہ امور کے حوالے منعقدہ ہفتہ واری میٹنگ کے آغاذ پر کیا جس میں ضلع ہذا کے تمام تھانہ جات سے آئے ہوئے پچاس کنسٹیبلان نے شرکت کی۔میٹنگ میں آفس سٹاف کے تمام برانچ انچارجز اور انچارج ویلفیئر انسپکٹر راشد سبحانی نےبھی شرکت کی۔اس موقع پر ڈی پی او نے کہا کہ پولیس ملازمین کے مسائل کے حل اور ویلفیر کے اقدامات کےلیےیہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رکھیں گے ۔انہوں نے کہا کہ میں آپ کو عزت دوں گا ، آپ عوام کو عزت دیں۔اس طرح عوام کا پولیس پر اعتماد بڑھے گا اور پولیس عوام دوست کلچر کو فروغ ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ڈی پی او آفس میں پولیس ملازمین کے لیے آفیشلز ویٹنگ روم بنا دیا گیاہے جہاں پولیس ملازمین کے لئےچائے اور ٹھنڈے پانی کے علاوہ بیٹھنے کے لیے بہترین انتظام کر دیا گیا ہے ،تمام ملازمین محکمہ پولیس کا بہتر امیج اجاگر کریں ۔ پو لیس ملازمین بہت زیادہ ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دیتے ہیں لیکن جب کوئی ملازم اپنے فرائض صحیح طریقے سے اور دیانتداری سے سرانجام نہیں دے گا تو اس کا اثر پورے محکمہ پر پڑے گا ۔جو ملازم وردی کی عزت کا پاس نہیں کرے گا اس سے سختی سے پیش آؤں گا ۔اس موقع پر پولیس ملازمین نےفرداٙٙ فرداٙٙ اپنے اپنے مسائل ڈی پی او کو بیان کیے جس پر انہوں نے موقع پر ہی ان کے حل کے لیے متعلقہ افسران کو ہدایات دیں ۔انہوں نے کہا کہ پولیس ملازمین کی پنشن ،تنخواہوں کی فکسیشن ،پرموشن اور سالانہ کارکردگی کی رپورٹس کے متعلق مسائل بھی جلد از جلد حل کیے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹرانسفر پوسٹنگ پالیسی وضع کر دی گئی ہے ۔لہذا کسی پولیس ملازم کواب سفارش کی ضرورت نہیں ۔ پولیس ملازمین کے بچوں کی ویلفیئر کے لیے ایک سو اٹھائیس عدد چیکس آچکے ہیں جو کہ فی الفورمتعلقہ پولیس ملازمین میں تقسیم کیے جا رہے ہیں ۔مزید مختلف تعلیمی اداروں کے ساتھ پولیس ملازمین کے بچوں کورعائیتی فیسوں پر تعلیم دیے جانے کے حوالے سے باقاعدہ ایم او یو بھی سائن کئے گئے ہیں تاکہ پولیس ملازمین لیےان کے بچوں کے تعلیمی اخراجات پر اٹھنے والے بوجھ کو کم کیا جا سکے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں